شہریوں کو ڈومیسائل حاصل کرنا نا ممکن بنا دیا گیا ہے۔ ارباب اختیار غیر ضروری کاغذات طلب کر کے شہریوں کو پریشان کرنے میں کامیاب۔ ڈپٹی کمشنر جہلم مفاد عوام از خود نوٹس لیں

تفصیلات کے مطابق شہری انتظامیہ کی بے حسی کی وجہ سے ڈومیسائل حاصل کرنے میں ایک شہری انتہاہی دقت محسوس کرتا ہے۔ درخواست ہندہ سے بلا وجہ غیر ضروری کاغذات طلب کیے جاتے ہیں۔ جب شہر ی کاغذات مہیا نہیں کر سکتا تو پھر متعلقہ کلرک معقول وجوہات کی بنا پر اپنے اختیارات کا استعمال کرتا ہے۔ شہری پابند ہے وہ 50روپے کا بیان حلفی دے نیز ووٹرلسٹ میں اُس کا نام بھی ہونا چاہیے۔نمبردار اور تحصیل دار کی تصدیق لازمی قرار دی گئی ہے۔ اس کے ساتھ بجلی یا پھر ٹیلی فون کا بل بھی درخواست کے ساتھ لف ہونا چاہیے۔تاریخ پیدائش کا سرٹیفکیٹ بھی ساتھ لگا نا ہو گا وغیرہ وغیرہ۔ یہ سب کچھ افسر شاہی کا کمال ہے۔ صرف شہریوں کوتنگ کرنا مقصود ہے۔ تاریخ پیدائش کا سرٹیفکیٹ مہیا کرنے کی کیا ضرورت ہے جبکہ شناختی کارڈ کاپی درکواست کے ساتھ ہے اس میں نام بھی ہو گا اور تاریخ پیدائش بھی، والد کا ڈومیسائل درخواست کے ساتھ لگانے کی صورت میں نمبر دار کی تصدیق ، بجلی بل کی فوٹو سٹیٹ طلب کرنا سر اسر ذیادتی ہے۔ سائل اگر میٹرک کی سند مہیا کرتا ہے تو یونین کونسل سے تاریخ پیدائش کا سرٹیفکیٹ بھی طلب کیا جاتاہے۔ سماجی زعماء دینہ نے ڈپٹی کمشنر جہلم سے اپیل کی ہے کہ وہ شہریوں کو آسانی مہیا کرنے میں اپنا عملی رول ادا کریں۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on Google+